17 Best Deep Urdu poetry about life

Deep poetry that is shared with you is mainly deep urdu poetry about life. Some of people are happy in life while some are not and a lot of fail in love and their life become more deep and depressive. Due to this , I had build a list of best urdu poetry about daily life. So enjoy now and share it with your friends.Here's all for you...


Deep Urdu Poetry about Life

گلہ کرونگی تو روٹھ جائے گا ڈانٹ دے گا
وہ میرے حصے کا وقت یاروں میں بانٹ دے گا
Gila kronge tu ruht jay ga dant dy ga
Wo mere hisse ka waqt yarron me bant day ga


خود ہی میں ہیں باعث تکلیف ہم اپنے لیے محسن
نہ ہم ہوتے نہ دل ہوتا ،نہ دل آزاریاں ہوتیں
Khud main hain bais-e-takleef hum apne lie mohsin
Na hum hote, Na dil hota, Na dil Azarian hote


بسمل وہ میری جان کا دشمن تو تھا مگر
کیوں پوری کائنات سے بہتر لگا مجھے
Bismal wo mere jan ka dushman tu tha magr
Kyun pure kainat se behter laga mujhe


جھکا کے گردن یہی ہے درشن
کہ یار مجھ میں میں یار میں ہوں
Jhuka ke Garden yehe ha darshan
Ky yar mujh me me Yar me hoon


زوق نظر کے دم سے گوارا ہے رنج زیست
خود کو بھی دیکھے ہیں تماشا بنا کے ہم
Zoq nazr ke gawara ha rang e zest
Khud ko bhe dekhte hain tamasha bana ke hum


Deep Urdu Poetry

خالی خالی جو گھر تھا اک دم بھر گیا
اداس بیٹھا وہ شخص کل رات مر گیا
Khali Khali jo ghr tha ak dum bhr gaya
Udas betha wo shaqs kal raat mr gya


کدھر کدھر سے چراغوں کے سامنے آؤں
گھڑی گھڑی تو ہواؤں کا رخ بدلتا ہے
Kidhe Kidhr se chrigaoon ke samne aao
Gharee Gharee tu hawao ka rukh badalta hai


سیاہ رات میں جلتے ہیں جگنو کی طرح
دلوں کے زخم بھی محسن کمال ہوتے ہیں
Siah raat main jalte hain jugnoo ki tarah
Dillo ke zakhm bhe Mohsin boht kamal hote hain


دیکھو یہ میرے خواب تھے ،دیکھو یہ میرے زخم ہیں
میں نے تو سب حسابِ جاں برسرِ عام رکھ دیا
Dekho ye mere khawb thee, Dekho ye mere zakhm
Main ny tu sub hisab barsar-e-aam rakh dia


یہ بات الگ ہے مرا قاتل بھی وہی تھا
اس شہر میں تعریف کے قابل بھی وہی تھا
Ye bat alag hai mera qatil bhee wohe tha
Iss shehr main tareef ke kabil bhe wohi tha


Deep Urdu Poetry about life

دست شفقت ہمیں زنداں میں میسر ہی نہیں
خود کے لگتے ہیں گلے اور سنبھل جاتے ہیں
Dast Shafqat humain zindan main muyassar he nahi
Khud ke gale lagte hain aur sambhal jate hain


یہ کون ہے اس کو زرا بلاؤ تو....!
یہ میرے حال پہ کیوں مسکراکے گزرا ہے
Ye kon ha iss ko zara bulao tu
Ye mere hal pr kyun muskara ke ugzra ha


مزاج میں تھوڑی سختی لازمی ہے
لوگ پی جاتے سمندر اگر کھارا نا ہوتا
Mizag main thore Sakhte Lazim hai
Log pe jate samander agr khara na hota


عقابی روح جب بیدار ہوتی ہے جوانوں میں
نظر آتی ہےان کو اپنی منزل آسمانوں میں
Ukabi ruuh jab baidaar hote hia jawano main
Nazar ati hai inko apni manzil asmanon main


ہر شخص پارسائی کی عمدہ مثال تھا
دل خوش ہوا خود کو گنہگار دیکھ کر
Har Shaqs pa-rasi ki umda misal tha
Dil kuch hoa khud ko gunahgar dekh kar


deep urdu poetry about life

نہ پیشی ہو گی نہ گواہ ہو گا
اب جو بھی الجھے گا تباہ ہوگا
Na pashe ho ge na gawah hoga
Ab jo uljhe ga tabah ho ga


ایک درویش میرے جسم کو چھو کر بولا
کیا عجیب لاش ہے سانس بھی لیتی ہے
Ak durwaish mere jism ko chuu kr bola
Kia ajeeb lash hai sans b late hai


میں عام ہوں مجھے خاص نہ کرو
کیا کہا محبت ہے؟ بکواس نہ کرو
Ma aam ku mujhe khas na kro
Kia kaha muhabat? Bakwas na kro

I think you enjoyed a lot so don't forget to share....

Post a Comment (0)
Previous Post Next Post